وزیرستانی کھلاڑی وسیم جونیئر سے حسن علی اور شاداب خان کی مبینہ بدسلوکی

UrduDesigner-1635619302971.jpeg_1_600x314
PCB

نیوزی لینڈ کیخلاف ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں جیت کے بعد فتح کا کیک کاٹ کر جشن منایا گیا جس میں تمام کھلاڑی ایک دوسرے کو اپنے ہاتھوں سے کیک کھلا رہے تھے، یہ ویڈیو پاکستان کرکٹ بورڈ کیجانب سے اپلوڈ کی گئی، جس میں بظاہر تو کوئی غیر معمولی بات نہیں تھی پر غور کرنے پر دیکھا جا سکتا تھا کہ کس طرح جب شمالی وزیرستان سے تعلق رکھنے والے نوعمر کھلاڑی وسیم جونیئر نے بھی اپنے ساتھیوں فاسٹ بالر حسن علی اور نائب کپتان شاداب خان کو کیک کھلانا چاہا تو اُن کی طرف سے صاف صاف انکار کر دیا گیا۔ سوشل میڈیا پر دونوں کھلاڑیوں کی اس حرکت کا بے حد بُرا منایا گیا اور ہر جانب سے وسیم جونیئر کیساتھ برتے گئے نامناسب رویے کی مذمت کی گئی۔ شائقین کا ماننا تھا وسیم سے یہ سلوک تعصب زدہ تھا، اسکی تین وجوہات ہو سکتی ہیں (۱) وسیم جونیئر کا ٹیم میں نیا ہونا (۲) وسیم کا تعلق شمالی وزیرستان سے ہونے کے باعث نسل پرستی (۳) شاداب اور حسن علی کے وسیم سے کسی اور وجہ پر اختلافات۔

ویڈیو جو تنقید کی وجہ بنی

PCB

حسن اور شاداب کے مداحوں نے ان الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ دونوں سینیئر کھلاڑیوں نے ایسا اسلئے کیا ہوگا کی فٹنس وجوہات کی بنا پر اُنھیں زیادہ میٹھا کھانے کی اجازت نہیں، بہرحال جلتی پر تیل کا کام خود پاکستان کرکٹ بورڈ کیجانب سے کیا گیا جب مذکورہ ویڈیو پی سی بی کے تمام سوشل میڈیا اکاؤنٹس سے ہٹا لی گئی جس سے امتیازی سلوک کی افواہوں کو مزید ہوا ملی۔ مداحوں کا تقاضا تھا کہ شاداب اور حسن علی وسیم سے معافی مانگیں یا پھر اپنے عمل کی وضاحت دیں، اُن کی طرف سے وضاحت یا معافی تو سامنے نہیں آئی پر لگتا ہے پی سی بی کو معاملے کی سنگینی کا احساس ہو گیا ہے، اسی لئے افغانستان کیخلاف فتح کے بعد نئی ویڈیو منظرِ عام پر آئی ہے جس میں کیک کاٹنے کے بعد حسن علی اور شاداب خان کو وسیم جونیئر سے بھرپور ہنسی مذاق کرتے اور خصوصی توجہ دیتے ہوئے ملاحظہ کیا جا سکتا ہے۔ ویڈیو کے اختتام پر حسن علی وسیم سے یہ بھی پوچھتے ہیں کہ “اب صحیح ہے نا؟ اب کوئی اعتراض تو نہیں؟”۔

پی۔سی۔بی کیجانب سے ڈالی گئی نئی ویڈیو

PCB

1 Like