کل 14 دسمبر کو سال کا آخری اور مکمل سورج گرہن، پاکستان میں کس وقت دیکھا جا سکے گا؟

محکمہ موسمیات نے کہا ہے کہ 14دسمبر کو رواں سال کا آخری سورج گرہن ہوگا۔پیرکو ہونے والا سورج گرہن مکمل سورج گرہن ہوگا تاہم پاکستان میں اس کو بالکل بھی نہیں دیکھا جاسکے گا۔سورج گرہن سب سے پہلے جنوبی امریکی ملک چلی اور ارجنٹینا میں دکھائی دے گا جہاں یہ مکمل گرہن ہوگا۔

رپورٹ کے مطابق 24 منٹ میں چاند سورج کے سامنے سے گزریگا اور اسے تقریباً 2 منٹ اور 10سیکنڈ کے لیے مکمل طور پر چھپا دیگا اور اس دوران ان ممالک میں دن کے وقت بھی اندھیرا چھاجائے گا۔ ان دو ممالک کے علاوہ سورج گرہن لاطینی امریکا کے دیگر ممالک اور جنوبی افریقا کے علاوہ بحرالکاہل، اوقیانوس ،بحرہند اورانٹارٹیکامیں جزوی دکھائی دیگا۔محکمہ موسمیات کے مطابق سورج گرہن پاکستانی وقت کیمطابق شام 6.34 پرشروع ہوگا اور رات11 بج کر53 منٹ پرختم ہوجائیگا۔۔۔۔
محکمہ موسمیات کی رپورٹ کے مطابق ایک رپورٹ کے مطابق 25 اور 26 دسمبر سے سردی کی شدید لہر پاکستان میں داخل ہو رہی ہے جس سے درجہ حرارت 1 یا 2 ڈگری یا منفی 1 تا 2 تک گر سکتا ہے جس سے 52 سال کا سردی کا ریکارڈ ٹوٹ سکتا ہے یہ سائبیرین ہوائیں 28 تا 29 دسمبر تک پاکستان اور ہندوستان کے اندر کاروباری نقل وحمل اور عام معمولات زندگی کو بری طرح متاثر کر سکتی ھیں اور اس دوران 26 دسمبر صبح 8:41 بجے مکمل سورج گرہن ہوگا جو صبح10:41 بجے ختم ھوگایہ 20 سال میں بدترین سورج گرہن ہوگا جس سے چمکتا دن سرخ اندھیرے میں بدل جائے گا اور درجہ حرارت مزید گرنے کا خدشہ ہے ، ہم گرم علاقوں میں بسنے والے لوگ اتنی بڑی موسمیاتی تبدیلیوں سے ناآشناہونے کی وجہ سے اسں کا شکارہو سکتے ہیں لہذا گرم لباس کے پہنے بغیر گھر سے باہر مت نکلیںاور اپنے اردگرد بسنے والے غریب لوگوں کو آگاہ کریں اور گرم کپڑوں سے انکی مدد ضرور کریں،خدا کو اپنی مخلوق سے بہت پیار ہے اور جو اسکی مخلوق کی نوکری کرنے میں لگ جاتا ہے وہی کامیاب اور آسانیاں بانٹنے والا ہے،اس سردی کی شدید لہر سے سانس و دمہ کے مریض سب سے زیادہ متاثر ہونگے اور چھوٹے بچوں کو نمونیا جیسے جان لیوا مرض سے بچانے کے لئے گرم کپڑے اور ٹوپی کا لازمی استعمال کروائیں اور بلاضرورت گھر سے باھر
نہ نکلنے دیں۔ ‎